Sushant Singh Rajpoot Suicide

ارے مسلمانو! ایک فوت شدہ انسان کو گالیاں دے کر یا برا بھلا کہہ کر تم کونسے اسلام کی خدمت کر رہے ہو۔ اسلام اسکی اجازت نہیں دیتا۔ بے شک ہم سوشانت سنگھ کے مغفرت کی دعا نہیں کرسکتے لیکن افسوس تو کر سکتے ہیں کہ ہم نے اسلام کی دعوت اس تک نہیں پنہچائی۔ وہ اگر خودکشی کر گیا تو اس کا مطلب اسے دنیا کی دولت ، عزت ، اور شہرت سے سکون نہین ملا ہو سکتا ہے کوئی اسکو اسلام کی دعوت دیتا تو اسے اس میں سکون مل جاتا۔ اسکو برا بھلا کہنے والو ہم کتنا لوگوں تک دعوت پنہچا رہے ہیں۔رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ابھی دعوت کا آغاز کیا تھا۔ ابو سفیان رضی اللہ عنہ (جو ابھی مسلمان نہیں تھے) جب ہرقل کے پاس پنہچے تو ہرقل نے اس سے نبی ﷺ اور آپﷺ کی دعوت کے بارے پوچھا تو وہ سب کچھ جانتا تھا۔یعنی آپﷺ کی دعوت حرف بہ حرف اس تک پنہچی تھی ۔ ہم نے کتنے لوگوں تک دعوت پنہچائی ہے؟

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Previous post کیا اس کائنات کا کوئی خالق ہے؟ خدا کے وجود پر دلائل
Next post Punjab makes Holy Quran teaching with translation mandatory in universities
WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com