Please enable JavaScript to see daily hadith

علم غیب

علم غیب صرف اور صرف اللہ کے پاس ہے اللہ کے علاوہ آسمان اور زمین میں غیب جاننے والا کوئی نہیں حتی کے اللہ کے نبی بھی علم غیب نہیں جانتے تھے

نبی صلی اللہ علیہ وسلم عالم الغیب اور حاظر و ناظر نہیں

ایک وسوسہ: شیطان اگر ہر جگہ آکر لوگوں کو بہکا سکتا ہے تو کیا نبی صلی اللہ علیہ وسلم ہر جگہ حاضر و ناظر نہیں ہو سکتے؟   الجواب بعون الوھاب   تمام دنیا کو بہکانے کے لئے ایک ہی شیطان متعین نہیں کیا گیا ہے بلکہ ہر انسان کے ساتھ جنوں میں سے ایک قرین (ساتھی) پیدا کیا جاتا ہے جو اسے زندگی بھر بہکاتا اور گمراہ کرتا ہے۔   جناب عبداللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:   ” مَا مِنْكُمْ مِنْ أَحَدٍ إِلَّا وَقَدْ وُكِّلَ بِهِ قَرِينُهُ مِنَ الْجِنِّ ” ، قَالُوا : وَإِيَّاكَ يَا رَسُولَ اللَّهِ ، قَالَ : ” وَإِيَّايَ إِلَّا أَنَّ اللَّهَ أَعَانَنِي عَلَيْهِ ، فَأَسْلَمَ فَلَا يَأْمُرُنِي إِلَّا بِخَيْرٍ  تم میں سے ہر ایک آدمی کے ساتھ اس کا جن ساتھی مقرر کیا گیا ہے صحابہؓ کرام نے عرض کیا آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ بھی اے اللہ کے رسول؟ آپ نے فرمایا ہاں میرے ساتھ بھی مگر اللہ نے مجھےاس پر مدد فرمائی تو وہ مسلمان ہو گیا پس وہ مجھے نیکی ہی کا حکم کرتا ہے۔   (صحیح مسلم کتاب صفات المنافقین، حدیث 7108)   اور عائشہ رضی اللہ عنہا کی روایت میں ہے کہ “ہر انسان کے ساتھ شیطان ہے۔” (مسلم ایضا)

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
Follow by Email
YouTube